میڈیکل کالجز کی فیس وصولی کا طریقہ اب سپریم کورٹ خود طے کرے گی چیف جسٹس کا بیان ؂

0
2

چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے تمام پرا ئیویٹ میڈیکل کالجز کو فیس وصولی کی ہدایت دینے کے لیے نوٹس جاری کر دیا جس میں چیف جسٹس نے میڈیکل کالجز کو 7 روز میں تحریری رپوٹ جمع کرانے کا حکم دیتے ہوے کہا کہ آج کے بعد فیس وصولی کا طریقہ کار سپریم کوٹ طے کرے گی اور سپریم کوٹ کی طے شدہ فیس ہی وصول کی جاے گی ۔
سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں پرا ئیویٹ میڈیکل کالجز میں بھاری فیسوں کی وصولی ازخود نوٹس کی سما عت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثار نے نہ صرف پاکستان کے تمام میڈیکل کالج فیسوں کے کیس سپریم کوٹ ٹرانسفر کرنے کا حکم دیا بلکہ گورنر پنجاب رفیق رجوانہ کے بیٹے کو بھی طلب کر لیا ۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے کیس کی سما عت کی اور اس دوران عدالت کی طلبی پر بعض میڈیکل کالجز کے چیف ایگزیکٹو ااور مالکان عدالت میں پیش ہوے جبکہ فاطمہ میموریل کالج اور شریف میڈیکل اینڈ ڈینٹل کالج کے چیف ایگزیکٹو اور مالکان عدالت میں پیش نہ ہوے ، کیس کی سما عت کے دوران خاتون وکیل نے عدالت کو بتایا کہ عدا لت میں زیا دہ فیس وصولی سے متعلق شکا یت پر مجھے گورنر پنجاب رفیق رجوانہ کے بیٹے اور بڑے بڑے لو گو ں کے فو ن آئے جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ کیسے جر۱ت ہو سکتی ہے کہ گورنر کا بیٹا آپ کو فون کرے ، قا نو ن میں دیکھیں کے گورنر پنجاب کو طلب کرنے کی کیا گنجا ئش ہے ، اسی دوران کچھ وقفے کے بعد چیف جسٹس نے گورنر پنجاب کے بیٹے کو طلب کر لیا ۔

Comments

comments

LEAVE A REPLY